November 30, 2023
تیلا تھوتھا کے طبی استعمالا ت

تیلا تھوتھا کے طبی استعمالا ت

تیلا تھوتھا کے طبی استعمالا ت

تیلا تھوتھا کے طبی استعمالا ت
تیلا تھوتھا کے طبی استعمالا ت

تیلا تھوتھا کے طبی استعمالا ت
Medicinal uses of Nila Thotha
الاستخدامات الطبية لنيل ثوثا
حکیم المیوات قاری محمد یونس شاہد میو

تیلا تھوتھا:یعنی کاپر سلفیٹ طب کی دنیا میں معروف سہل الحصول چیز ہے عمومی طورپر اسے بیرونی کاموں کے لئے استعمال کیاجاتا ہے ۔مرہموں استعمال کیا جاتا ہے اس کی پچکاری دی جاتی ہے۔زخموں کے لئے لوشن تیار کیئے جاتے ہیں ۔
پاک و ہند کے اطباء کرام اسے خوردنی طورپر کشتہ کرکے کھلاتے ہیں۔طبی کتب میں اس کے لمبے چوڑے فوائد مرقوم ہیں۔وہیں پر دیکھ لئے جائیں۔لیکن بلغمی یعنی رطوبتی امراض کے تیلا تھوتھا کمال کا فائدہ کرتا ہے۔بے احتیاطی کسی بھی پریشانی کا سبب بن سکتی ہے اس لئے اناڑی قسم کے لوگوں کو اس سے دور رہنا چاہئے۔اسے میڈیکل میں بھی استعمال کیا جاتا ہے ۔باقی صنعت و حرفت۔زراعت۔باغبانی میں اس کا بہت زیادہ استعمال ہوتا ہے۔میڈیکل میں اس کا مناسب استعمال ہوتا ہے۔اگر نیلا تھوتھا ایک طبیب کے لئے قابل ملامت ہے تو ایک میڈیکل سے وابسطہ فرد کے لئے بھی ہونا چاہئے۔اگر وہاں اجازت ہے تو ایک حاذق طبیب کے لئے راستے کھلے رکھنے چاہیئں۔

کشتہ تانبا۔
درج ذیل بیماریوں، حالت اور تشخیص میں علاج،قابو پانے، روک تھام کرنے یا بہتری کے لئے:
اسہال۔مںہاسی۔جگر کا بڑھ جانا۔سینے اور معدے میں جلن کا احساس۔بدہضمی
شنکھ بھاسما / نیلا تھوتھا بھسما کو ان مقاصد کے لیے بھی استعمال کیا جا سکتا ہے جو یہاں درج نہیں ہیں
تیلا تھوتھا:یعنی کاپر سلفیٹ کے صحت کے فوائد
کاپر سلفیٹ، جسے کپرک سلفیٹ یا کاپر سلفیٹ بھی کہا جاتا ہے، متعدد ایپلی کیشنز کے ساتھ ایک ورسٹائل کیمیائی مرکب ہے۔ اپنے صنعتی استعمال سے ہٹ کر، کاپر سلفیٹ صحت کے بہت سے فوائد پیش کرتا ہے جنہوں نے حالیہ برسوں میں خاصی توجہ حاصل کی ہے۔ اس جامع مضمون میں، ہم کاپر سلفیٹ کے مختلف فوائد کا جائزہ لیں گے اور یہ آپ کی فلاح و بہبود پر کس طرح مثبت اثر ڈال سکتا ہے۔

علمی فعل کو بڑھانا
کاپر سلفیٹ کے قابل ذکر صحت کے فوائد میں سے ایک یہ ہے کہ اس کے علمی افعال کو بڑھانے کی صلاحیت ہے۔ کاپر اعصابی نظام کی نشوونما اور دیکھ بھال میں اہم کردار ادا کرتا ہے، دماغ کے بہترین کام میں حصہ ڈالتا ہے۔ مطالعات سے پتہ چلتا ہے کہ تانبے کی کمی اعصابی عوارض اور علمی زوال کا باعث بن سکتی ہے۔ اپنی خوراک میں کاپر سلفیٹ کو شامل کرکے، آپ دماغی صحت کو سہارا دے سکتے ہیں، یادداشت کو بہتر بنا سکتے ہیں اور علمی صلاحیتوں کو تیز کر سکتے ہیں۔

مدافعتی نظام کو مضبوط بنانا
ایک مضبوط مدافعتی نظام کو برقرار رکھنا مجموعی صحت اور تندرستی کے لیے بہت ضروری ہے۔ کاپر سلفیٹ میں antimicrobial خصوصیات ہیں، یہ انفیکشن سے لڑنے اور مدافعتی نظام کو مضبوط بنانے میں ایک قیمتی اتحادی بناتی ہے۔ اس مرکب نے پیتھوجینز کی ایک وسیع رینج کے خلاف افادیت ظاہر کی ہے، بشمول بیکٹیریا، وائرس اور فنگی۔ کاپر سلفیٹ کو اپنے روزمرہ کے معمولات میں شامل کر کے، آپ اپنے جسم کے دفاعی نظام کو مضبوط بنا سکتے ہیں اور بیمار پڑنے کے خطرے کو کم کر سکتے ہیں۔
ہڈیوں کی صحت کو فروغ دینا
صرف کیلشیم ہی ہڈیوں کی بہترین صحت کے لیے کافی نہیں ہے۔ کاپر سلفیٹ صحت مند ہڈیوں اور مربوط بافتوں کی تشکیل اور دیکھ بھال میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔ یہ ہڈیوں کی ساخت کے ضروری اجزاء کولیجن اور ایلسٹن کی پیداوار میں مدد کرتا ہے۔ مزید برآں، کاپر سلفیٹ کیلشیم اور دیگر معدنیات کے جذب کو تیز کرنے میں مدد کرتا ہے جو مضبوط اور گھنی ہڈیوں کو برقرار رکھنے کے لیے ضروری ہے۔ کاپر سلفیٹ کا باقاعدگی سے استعمال آسٹیوپوروسس اور فریکچر کے خطرے کو کم کرنے میں معاون ثابت ہوسکتا ہے، خاص طور پر جب آپ کی عمر بڑھتی ہے۔
قلبی صحت کی معاونت
کاپر سلفیٹ قلبی صحت کے لیے کئی فوائد پیش کرتا ہے۔ یہ خون کے سرخ خلیوں کی پیداوار میں مدد کرتا ہے، جو پورے جسم میں آکسیجن پہنچانے کے لیے ذمہ دار ہیں۔ آکسیجن کی مناسب فراہمی کو یقینی بنا کر، کاپر سلفیٹ دل کی صحت کو سہارا دیتا ہے اور قلبی امراض کو روکنے میں مدد کرتا ہے۔ مزید برآں، کاپر سلفیٹ بلڈ پریشر کو کنٹرول کرنے، ہائی بلڈ پریشر اور متعلقہ پیچیدگیوں کے خطرے کو کم کرنے میں مدد کرتا ہے۔
توانائی کی سطح کو بڑھانا
اگر آپ اکثر اپنے آپ کو تھکاوٹ یا توانائی کی کمی محسوس کرتے ہیں تو، کاپر سلفیٹ ایک حل پیش کر سکتا ہے۔ یہ مرکب اڈینوسین ٹرائی فاسفیٹ (ATP) کی پیداوار میں اہم کردار ادا کرتا ہے، جو ہمارے خلیات میں بنیادی توانائی کی کرنسی کے طور پر کام کرتا ہے۔ اپنی خوراک میں کاپر سلفیٹ کو شامل کرکے، آپ ATP کی پیداوار کو بڑھا سکتے ہیں، جس کے نتیجے میں توانائی کی سطح میں اضافہ ہوتا ہے اور مجموعی طور پر جیورنبل میں بہتری آتی ہے۔
جلد کی صحت کو بڑھانا
کاپر سلفیٹ میں نمایاں خصوصیات ہیں جو آپ کی جلد کو مختلف طریقوں سے فائدہ پہنچا سکتی ہیں۔ یہ کولیجن کی پیداوار کو فروغ دیتا ہے، جو جلد کی لچک اور مضبوطی کو برقرار رکھنے کے لیے ایک اہم پروٹین ہے۔ مزید برآں، کاپر سلفیٹ اینٹی آکسیڈینٹ سرگرمی کو ظاہر کرتا ہے، جو نقصان دہ فری ریڈیکلز کو بے اثر کرنے میں مدد کرتا ہے جو کہ قبل از وقت عمر بڑھنے میں معاون ہے۔ کاپر سلفیٹ پر مشتمل سکن کیئر پروڈکٹس استعمال کرکے یا اسے مناسب مقدار میں استعمال کرکے، آپ چکنی، زیادہ جوان نظر آنے والی جلد سے لطف اندوز ہوسکتے ہیں۔
حفاظت اور خوراک پر اہم نوٹ
اگرچہ کاپر سلفیٹ متعدد صحت کے فوائد پیش کرتا ہے، لیکن احتیاط برتنا اور تجویز کردہ خوراک کی ہدایات پر عمل کرنا ضروری ہے۔ کاپر سلفیٹ کا زیادہ استعمال تانبے کے زہریلے پن کا باعث بن سکتا ہے، جس کے نتیجے میں متلی، پیٹ میں درد، اور جگر کے نقصان جیسی علامات پیدا ہوتی ہیں۔ کاپر سلفیٹ سپلیمنٹس کو اپنے معمولات میں شامل کرنے سے پہلے ہیلتھ کیئر پروفیشنل سے مشورہ کرنا مناسب ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
فراہم کردہ ویب سائٹ، https://www.rxlist.com/copper/supplements.htm، تانبے، اس کے استعمال، خوراک، مضر اثرات، اور منشیات کے تعامل کے بارے میں معلومات پر مشتمل ہے۔ کاپر ایک ضروری ٹریس معدنیات ہے جو جسم کے مختلف عملوں میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔ یہ کھانے کی اشیاء جیسے سیپ، سارا اناج، پھلیاں، گری دار میوے، اور عضوی گوشت میں پایا جاتا ہے۔
تانبا خون کے سرخ خلیات بنانے کے لیے آئرن کے ساتھ کام کرتا ہے اور خون کی نالیوں، اعصاب، مدافعتی نظام اور ہڈیوں کی صحت کو برقرار رکھنے میں مدد کرتا ہے۔ یہ لوہے کے جذب میں بھی مدد کرتا ہے۔ تانبے کا تجویز کردہ یومیہ الاؤنس (RDA) عمر اور جنس کے لحاظ سے مختلف ہوتا ہے، 200 mcg سے 1,300 mcg تک۔ بالغوں کے لیے اوپری حد 10,000 mcg فی دن ہے۔
تانبے کی اضافی خوراک کے عام ضمنی اثرات میں متلی/الٹی اور جگر کی خرابی شامل ہیں۔ کاپر کا دوسری دوائیوں کے ساتھ کوئی شدید یا سنجیدہ تعامل نہیں ہے۔ ویب سائٹ کسی بھی دوا کی خوراک شروع کرنے، روکنے یا تبدیل کرنے سے پہلے صحت کی دیکھ بھال کرنے والے پیشہ ور سے مشورہ کرنے کی اہمیت کو اجاگر کرتی ہے۔
ایک اور ذریعہ، کا ذکر ہے کہ تانبا بنیادی طور پر تانبے کی کمی اور اس سے منسلک خون کی کمی کے علاج کے لیے استعمال ہوتا ہے۔ یہ آسٹیوپوروسس کے لیے بھی استعمال کیا جا سکتا ہے، لیکن دیگر حالات، جیسے الزائمر کی بیماری اور مہاسوں کے لیے اس کی تاثیر سائنسی ثبوتوں کی کمی ہے۔
حفاظت کے حوالے سے، تانبا عام طور پر محفوظ ہوتا ہے جب اسے روزانہ 10 ملی گرام تک کی مقدار میں استعمال کیا جاتا ہے۔ زیادہ خوراکیں غیر محفوظ ہو سکتی ہیں اور تانبے کی زیادہ مقدار کی علامات کا باعث بن سکتی ہیں، جیسے متلی، الٹی، اسہال، اور گردے کی خرابی۔ کاپر آکسائیڈ پر مشتمل زخم کی ڈریسنگ جلد پر لگنے پر ممکنہ طور پر محفوظ سمجھی جاتی ہے۔

مزید برآں، https://www.rxlist.com/copper-drug.htm کاپر (کپرک کلورائیڈ انجیکشن) کے بارے میں معلومات فراہم کرتا ہے جو کل پیرینٹریل نیوٹریشن (TPN) کے لیے نس کے حل میں ایک اضافی کے طور پر استعمال ہوتا ہے۔ یہ تانبے کے سیرم کی سطح کو برقرار رکھنے اور کمی کی علامات کو روکنے میں مدد کرتا ہے۔ TPN حاصل کرنے والے بالغوں کے لیے تانبے کی تجویز کردہ خوراک 0.5 سے 1.5 ملی گرام فی دن ہے، جبکہ بچوں کے مریضوں کے لیے، یہ 20 ایم سی جی/کلوگرام یومیہ ہے۔

مجموعی طور پر، تانبا جسم میں مختلف افعال کے ساتھ ایک ضروری ٹریس معدنیات ہے. یہ عام طور پر تانبے کی کمی اور منسلک خون کی کمی کے علاج کے لیے استعمال ہوتا ہے۔ تاہم، تجویز کردہ خوراکوں کی پیروی کرنا اور مناسب رہنمائی کے لیے صحت کی دیکھ بھال کرنے والے پیشہ ور سے مشورہ کرنا ضروری ہے۔
کاپر سلفیٹ زہر کی علامات میں شامل ہو سکتے ہیں:
سینے یا پیٹ میں جلن کا احساس
منہ میں دھاتی ذائقہ
متلی
سر درد
اسہال (جو کمپاؤنڈ کی رنگت کی وجہ سے نیلے یا سبز رنگ کی نمائش کر سکتا ہے)
ضرورت سے زیادہ پسینہ آنا۔
اس سے قطع نظر کہ الٹی ہوئی ہے یا نہیں، جن افراد نے کاپر سلفیٹ کھایا ہے انہیں زہر کو مسترد کرنے کے لیے طبی امداد حاصل کرنی چاہیے اور اس بات کو یقینی بنانا چاہیے کہ دماغ، جگر، گردوں، یا پیٹ کے استر کو کوئی نقصان نہیں پہنچا ہے۔ اگرچہ انتہائی نایاب، کچھ حالات میں کاپر سلفیٹ کی زیادہ مقدار کی نمائش موت کا باعث بن سکتی ہے اگر علاج نہ کیا جائے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
کاپر سلفیٹ کے استعمال: ایک مکمل فہرست
کاپر سلفیٹ ایک غیر نامیاتی مرکب ہے جس میں صنعتی اور زرعی استعمال کی وسیع اقسام ہیں۔ مثال کے طور پر، اسے کیڑے مار دوا، فنگسائڈ، جڑی بوٹی مار دوا، الگا کش، یا مولوسائڈ کے طور پر استعمال کیا جا سکتا ہے۔

اس کیمیائی مرکب کا سب سے مشہور استعمال تالابوں یا جھیلوں میں طحالب کی افزائش کو کنٹرول کرنا ہے۔ تاہم، اسے کیڑوں کو مارنے کے لیے، ایک آکسیڈائزر کے طور پر، اور مینوفیکچرنگ کے عمل میں بھی استعمال کیا جا سکتا ہے۔
آج کا مضمون ان تمام مختلف طریقوں کو دریافت کرے گا جن سے کاپر سلفیٹ استعمال کیا جا سکتا ہے، تاکہ آپ کو معلوم ہو کہ یہ کب کام آ سکتا ہے!
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
کُشتہ نیلاتھوتھا، کینسر کے زخموں اور پھوڑوں، کیلئے
نسخہ الشفاء : نوشادرکا تیل 250 گرام، ہوائی لے کر جو صد ف یا قشر بیضہ میں بنا ہو 50 گرام، گندھک آملہ سار کو اس کے 50 گرام، سے کھرل کریں ایک پہر کھرل کے بعد ایک پہر پیالہ چینی میں آتش نرم پر تشویہ دیں بعد ازاں پانی ڈال کر نوشادر خارج کریں اور جدید ہوائی تیل 50 گرام، سے کھرل کریں اسی طرح یہ عمل پانچ دفعہ دھرائیں کبریت قائم بے 20 گرام نیلا کی ڈلی عمدہ لے کر اس پر کبریت معمولہ 50 گرام، کا شیر مدار میں لیپ دیں اور خشک کر کے پوست ریٹھہ 100 گرام، کے نغدہ کے درمیان دو چینی یا سلور کی پیالیوں میں رکھ کر 3 کلو اپلہ صحرائی کی آگ دیں نیلا سفید باکرنت بلا زنگار ملے گا
فوائد : کینسر کے زخموں اور پھوڑوں کو تیزی سے درست کرتا ہے آتشک، سوزاک اور دیگر امراض خبیثہ کو صرف 3 خوراک کافی ہے دس ملی لیٹر عرق گلاب میں نصف چاول ملا کر صرف ایک پچکاری قرحہ سوزاکی کے مندمل کرنے کو کافی ہے اعمال صنعت اس سے الماس سازی کا کام نہایت آسان ہے کئی الماس پر ایک تا دو رتی لیپ کریں اور صرف 4 کلو آگ میں الماس اکسیری کشتہ و گا
شنگرف سڈھ کا چھوڑ ہے
گندھک پر بطریق معروف یعنی گرم حالت میں تیل کرتا ہے ۔
نسخہ الشفاء : نیلا تھوتھا 1 گرام، سم الفار 2 گرام، کھرل کر کے قلمی شورہ 2 گرام، زیر و بالا دے کر آدھ سیر کا بھڑکہ دیں بھڑکہ دیں جاذب قلعی ہے
ورقیہ قائم میٹھا سوڈا والی 3 گرام، نیلاتھوتھا 1 گرام، باہم خشک کھرل دو پہر کر کے تین قطرے کاربالک ایسڈ ملائیں اور تشویہ دین چند تشویہ میں ہڑتال کھل کر اکسیر ہو گی اور رتی تولہ چاندی پر طرح کھائے گی
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نیلا تھوتھا اصلی 1 تولہ۔کافور 10 تولہ
دونوں کو خوب سحق کریں۔دوا 2گرام لیں اور حسب ضرورت دہی میں خوب ملا لیں۔پنڈلی پر چنبل کو نیم گرم پانی سے دھو لیں اور کھدر کا کھرکنے سے ذخم آرام سے ملیں۔جب زخم کا کھرینڈ اتر جسئے تو زخم کو تولیے سے سکائیں۔اور مرہم ملا دہی اسپر آہستہ آہستہ لگائیں۔زخم میں نیلا سراہیت کرئے گا ابتدا میں جلن ہو گی پنکھے کی ہلکی ہوا میں زخم کا حصہ رکھیں۔جب جلن بند ہو جائے توزخم کو پھٹکڑی ملے پانی سے دھو کر سو کھا کریں اصلی ناریل کا تیل لگائی۔ہر روز یہ عمل کریں تاوقت کہ زخم ختم نہ ہو جائےخوراک میں دال مونگ مسور مکس اور جب افتیمونی صبح دوپہر شام کھانا کھانے کہ بعد اعر اطریفل شاہترہ دو وقت کھانے سے پہلے تمام گوشت بادی اشیاء بندشہد پانی میں ملا کر پیئں۔